بھارت میں اغوا کاروں نے ایک 8 سالہ بچے کو رہا کرنے کے لیے بٹ کوائن کرنسی میں 17 کروڑ روپے تاوان کا مطالبہ کیا ہے۔




دہلی - 19 دسمبر2020ء) ٹیکنالوجی کے جہاں فائدے بے شمار ہیں وہیں، جدید ٹیکنالوجی ہی کی وجہ سے مسائل نے بھی جنم لیا ہے، اس بات کی زندہ مثال بھارت میں پیش آنے والا ایک تازہ واقعہ ہے، جس میں 8 سالہ بچے کے اغوا کاروں نے 17 کروڑ روپے بٹ کوائن کرنسی میں تاوان طلب کیا ہے، بھارتی پولیس کے مطابق اگر تاوان بٹ کوائن کرنسی میں ادا کیا جاتا ہے، تو اغواکاروں کو پکڑنا کافی مشکل ثابت ہو سکتا ہے- تفصیلات کے مطابق بھارت میں اغوا کاروں نے ایک 8 سالہ بچے کو رہا کرنے کے لیے بٹ کوائن کرنسی میں 17 کروڑ روپے تاوان کا مطالبہ کیا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق 8 سالہ بچے انوبھوو کے اغوا کاروں نے بچے کی رہائی کے لیے 100 بٹ کوائن کا مطالبہ کیا ہے جو بھارتی کرنسی میں تقریباً 17 کروڑ روپے بنتے ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق اغوا کاروں نے انوبھوو کی فیملی کو بٹ کوائن دینے کا طریقہ کار بھی سمجھایا کہ کس طرح سے رقم ادا کرنی ہے۔ 8 سالہ بچے کو بھارتی شہر منگلورو سے اس وقت اغوا کیا گیا جب وہ اپنے گھر کے باہر کھیل رہا تھا۔


بھارتی میڈیا کے مطابق انوبھوو کے والد اور دادا شہر کے بڑے تاجر مانے جاتے ہیں۔ خیال رہے کہ بٹ کوائن ایک ڈیجیٹل کرنسی اور پیئر ٹو پیئر پیمنٹ نیٹورک ہے جو آزاد مصدر دستور پر مبنی ہے اور عوامی نوشتہ سودا کا استعمال کرتی ہے۔ بٹ کوائن کمانے یا حاصل کرنے میں کسی شخص یا کسی بینک کا کوئی اختیار نہیں۔ یہ مکمل آزاد کر نسی ہے، جس کو ہم اپنے کمپیوٹر کی مدد سے بھی خود بنا سکتے ہیں۔ ڈیجیٹل کرنسی بٹ کوائن نے اپنی تاریخ میں پہلی مرتبہ بیس ہزار ڈالر کا ہندسہ عبور کر لیا۔ رواں برس مارچ میں ایک بٹ کوائن کی قیمت تقریبا 5ہزار ڈالر تھی لیکن اس کی مانگ میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔


Post a Comment

Previous Post Next Post